دولہا اور میت

ٍٍ فضاسوگوار ہے۔ لوگ جنازے کو میت گاڑی میں سوارکررہے ہیں۔اس گاڑی کاشکستہ ڈھانچہ،بوسیدہ سیٹیں،زنگ آلود لوہا اورکھڑاکھڑ کرتاہواانجن اعلان کررہے ہیں کہ یہ گاڑی موت کی علامت ہے،یہ زندگی سے دوری کاپیغام ہے،یہ دنیاسے کاٹنے والی سواری ہے۔
دوسری جانب دولہاکی گاڑی ہے۔پھولوں سے سجی اورخوشبوؤں میں لپٹی ہوئی اس کا شوخ سرخ رنگ،یخ کردینے والااے سی(A.C ). ،چمچماتی ہیڈلائیٹس اورجلتے بجھتے انڈیکیٹرز( Indicators)زندگی سے قربت کااعلان کررہے ہیں۔
میت گاڑی میں کفن میں لپٹاہوامسافرسوچ رہاہے کہ وہ بھی کبھی دولہاکی گاڑی میں بیٹھاتھاجب اس کاسینہ جذبات سے لبریزتھا۔آنکھوں میں سپنے تھے۔اس دن کااسے شدت سے انتظارتھا۔سولہ سالہ تعلیم،اچھی ملازمت اورکئی سالوں کی سیونگزکے بعدوہ اس قابل ہواتھاکہ ایک اچھے گھرانے کی لڑکی سے شادی کرسکے۔شادی ہوگئی اوراب زندگی کے مقاصدبدل گئے۔ذاتی مکان کاحصول،بچوں کی اعلیٰ تعلیم اورسوسائٹی میں اعلیٰ مقام مقصدحیات بن گئے۔طویل جدوجہدکے بعدسب کچھ مل گیا۔ہزارگزکابنگلہ،کروڑوں کابینک بیلنس،کئی چمکتی ہوئی کاریں اوراس کے قدسے اونچی اولاد۔ایک دن وہ بیٹھاحساب کتاب کررہاتھاکہ کیاکھویاکیاپای توااچانک ملک الموت آدھمکا اور اسےموت کا مژدہ سنانے لگا۔اس نے بے یقینی سے فرشتے کو دیکھا لیکن اسکی آنکھوں میں کرختگی تھی۔اس نے فرشتے سے درخواست کی کہ وہ اپنے کرنٹ اکاؤنٹ کابیلنس اگلی دنیامیں ٹرانسفرکرلے لیکن معلوم ہوا کہ اس ابدی دنیامیں کاغذی نوٹ نہیں چلتے۔اس نے چاہاکہ اپنے مکان کے کاغذات ہی لے چلے لیکن پتاچلاکہ وہاں مٹی کے گھروندے نہیں ہوتے۔فرشتے نے اس کی روح قبض کی اورحسرت بھری لاش کو چھوڑکرچلدیا۔
یہ کل کا دولہاآج میت کی ڈولی میں لیٹاسوچ رہاہے کہ اس نے اپنی زندگی کے ساٹھ سال ایک سراب کے پیچھے بھاگتے ہوئے کھپادیے اوردوسری دنیاکے لیے کوئی انویسٹمنٹ نہیں کی۔زندگی کے ابتدائی مرحلے میں اس نے اپنے لیے دولہاکی گاڑی کوٹارگٹ بنایا۔جبکہ دوسرے مرحلے میں وہ اپنے بچوں کے لیے دولہاکی گاڑی کومنزل مقصودسمجھ بیٹھا۔اس سواری نے اسے جس مقام پرپہنچایاوہ عارضی اورفناہوجانے والاتھا۔جبکہ میت گاڑی کاسفرآخری ہے اوراس کااختتام ایک ابدی حیات کاآغازہے۔دولہاگاڑی کی منزل اک سراب جب کہ میت گاڑی کا مستقر ایک حقیقت ہے۔

Advertisements

4 responses to this post.

  1. دنیا کی بے ثباتی اور فکر آخرت پر ایک شاندار تحریر۔ اللہ آپ کو جزائے خیر دے اور آپکی کاوشوں کو آپ کیلئے سرمایہ آخرت بنائے۔ آمین

    جواب دیں

  2. Excellent article.

    جواب دیں

تبصرہ کیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s