چوتھا مضمون – ذکر الٰہی کے غلط تصورات

۱۔غیر مسنون تذکر

اللہ کی یاد کے لئے دنیا ترک کردینا،بیوی بچوں کے فرائض سے غافل ہوکر تبلیغ پر نکل جانا، اللہ ہو کی ضربیں لگانا، فنا فی الشیخ یا فنا فی اللہ کے مراقبے کرنا، قبر پر چلہ کشی کرنا، کشف و کرامات کو ذکراللہ کا مقصد قرار دینا، کئی ہزار یا لاکھ مرتبہ کسی مخصوص وظیفے کا ورد کرنا یا کسی غیر مستند تسبیح سے دنیاوی مقاصد کا حصول وغیرہ وہ چند غلط اور اجنبی تصورات ہیں جن کا ثبوت نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے اسوہ مبارک سے نہیں ملتا۔
2۔ مسنون ذکر کو بھی غلط سمجھنا
دوسری انتہا پر وہ لوگ کھڑے ہیں جو ذکر کے مسنون طریقوں کو بھی اوپر بیان کردہ کیٹگری میں رکھتے اور اسے غلط مانتے ہیں۔ حالانکہ کچھ تسبیحات کا ایک مخصوص گنتی کے ساتھ پڑھنا اسوہ نبی کریم سے ثابت ہے ۔چنانچہ کلمہ طیبہ کا ورد کرنا، درود شریف پڑھنا، سبحان اللہ ، الحمد للہ یا دیگر تسبیحات کا ایک مخصوص تعداد یا بلا کسی گنتی کے پڑھنے میں کوئی قباحت نہیں۔ گو کہ ان تسبیحات کو سمجھ کر پڑھنا ہی مقصود ہے لیکن ایک عام اور کم تر علمیت والے شخص کے لئے ان کا بلا سمجھے پڑھنا بلاشبہ کسی نہ کسی درجے میں فائدہ مند ہے۔
3۔مخصوص طریقے پر اصرار
ایک اور اہم پہلو یہ ہے کہ کچھ لوگ اپنے پسندیدہ اور مخصوص ذکر کے طریقے کو ہی درست سمجھتے اور اس میں کسی تنوع اور اختلاف کو بری نگاہ سے دیکھتے ہیں حالانکہ ذکر کے مختلف طریقے اور مدارج ہیں جو ہر شخص اپنے مزاج، حالات، علمی قابلیت اور وقت کی دستیابی کی بنیاد پر اپنا سکتا ہے۔ چنانچہ ایک ٹھیلے والے بھائی کو سقراط و بقراط سمجھ کر اس سے تفکر و تعقل کےاعلیٰ درجوں پر فائز کرنے کی کوشش کرنا مناسب نہیں۔ اسی طرح ایک عالم و فاضل ڈاکٹر کو محض کلمہ طیبہ کا ورد کروانا بھی غلط ہے۔

Advertisements

2 responses to this post.

  1. Aqil Bhai u have written an explanatory article abot remembrance of Allah Almight n have also clarified the misconceptions present in our society besides the true meaning of Zikir of Allah Almighty.

    جواب

  2. جزاک اللہ خيراٌ
    ميری آپ سے ايک درخواست ہے کہ جب آپ اس موضوع پر تحرير مکمل کر ليں تو مجھے ديئے ہوئے ای ميل پتہ پر اطلاع کر ديجئے گا تاکہ ميں مکمل مضمون اپنے پاس نقل کر کے محفوظ کر لوں ۔ ظاہر ہے کہ يہ آپ کے نام سے ہی رہے گا

    جواب

تبصرہ کیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s