قصر الزہرہ


عبد الرحمن ثالث اسپین کا ایک عظیم حکمران تھا۔وہ 300ھ میں اس وقت اقتدار میں آیا جب اسپین کی سلطنت ٹکڑے ٹکڑے ہوکر یورپ کی مسیحی طاقتوں کا نوالہ بننے والی تھی۔مگر نصف صدی کے اس کے اقتدار کے بعد350ھ میں جب اس کا انتقال ہوا تو اسپین یا اندلس پورے یورپ سے زیادہ طاقتور اور دنیا کی خوشحال ترین ریاست بن چکی تھی اور یہاں مسلم اقتدار مزید500برس قائم رہا۔

عبدالرحمن کے عہد میں اسپین عظمت اور ترقی کے جس مقام پر پہنچا اس کا ایک اظہار وہ محل ہے جو اس نے اپنی بیوی زہرہ کے لیے قرطبہ کے نزدیک بنوایا۔یہ محل جس کا نام قصر الزہرہ تھا،12مربع میل کے رقبے پر پھیلا ایک شہر جتنا وسیع تھا۔اس میں 15000بلند اور شاندار دروازے تھے۔اس کی تعمیر کے لیے دنیا بھر سے اعلیٰ تعمیری سامان منگوایا گیا اوربے دریغ سونا چاندی ، ہیرے جواہرات اور انتہائی شفاف سنگ مرمر کا استعمال کیا گیا تھا۔دس ہزار معماروں نے دن رات کام کرکے اس محل کو 25برس میں مکمل کیا ۔ اس کے تعمیری حسن، صناعی اور دلکشی کو دیکھنے کے لیے دنیا بھر سے لوگ آتے تھے اور اپنے زمانے میں اس سے زیادہ بہتر تعمیر دنیا میں موجود نہ تھی۔مگراتفاق کی بات ہے کہ یہ محل جس برس مکمل ہوا اسی سال عبدالرحمن کا انتقال ہوگیا۔اس کی بیوی بھی نہ رہی اور جب مسیحیوں نے قرطبہ پر قبضہ کیا توقصر الزہرہ کا نام و نشان مٹادیا۔

خدا نے یہ دنیا انسانوں کے امتحان کے لیے بنائی ہے۔اس دنیا میں ایک طرف یہ مواقع ہیں کہ ایک تنہا انسان تاریخ کا دھارا موڑ دے اور قصر الزہرہ جیسا محل بناڈالے، دوسری طرف یہاں موت اور گردش زمانہ کی وہ رکاوٹیں ہیں جو انسان کے ہر کارنامے کو کھاجاتی ہیں۔یہ صرف آخرت کی دنیا ہے جہاں کی بادشاہی میں عظمت اور ابدیت ایک ساتھ جمع ہوجاتی ہیں۔یہ دنیااصل میں اُس آنے والی بادشاہی کوحاصل کرنے کا بہترین موقع ہے ۔جس شخص نے ایمان، صبر اور عمل صالح کی مدد سے اس موقع کا فائدہ اٹھایااصل میں وہی آزمائش کی یہ بازی جیت گیا۔ باقی لوگوں کے حصے میں سوائے خسارے کے، کچھ نہیں آتا۔
By ریحان احمد یوسفی

Advertisements

5 responses to this post.

  1. Posted by Ameer Mohammad on 07/02/2012 at 11:38 صبح

    Assalam alaikum

    جواب

  2. Posted by Ameer Mohammad on 07/02/2012 at 11:37 صبح

    I love you sir for this article
    Ameer mohammad karachi

    جواب

  3. شکریہ کہ آپ نے قصر الزہرا کا تعارف کرایا ۔ لیکن یہ مسیحیوں کے ہاتھوں تباہ نہیں ہوا تھا بلکہ اس کی وجہ ایک بربر بغاوت تھی اور بربر بغاوت کی وجہ عرب اشرافیہ کا رویہ اور قصر الزہرہ پر دولت کا بے محابا استعمال تھا ۔ آجکل اسپین کی حکومت اسے اس کی اصلی حالت میں بحال کرنے کا کام کر رہی ہے

    جواب

  4. May Allah bless you brother. You are 100% right that this world is temporary n Allah has send all individuals from Adam(pbuh) till the Day of Judgement for a test so whoever passes this test will have Kingdom ship in the end which will never end or he will fail n burn in the fire which will also be for ever.May Allah guide us all to the straight path. Aameen.

    جواب

تبصرہ کیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s