تزکیہ نفس کیا ہے؟


بسم اللہ الرحمٰن الرحیم
میرے ایک دوست پاکستان سے باہر ایک مغربی ملک تشریف لے گئے۔ وہاں کا ماحول حسب توقع مادی رعنائیوں اور جنسی آزادی سے آراستہ تھا۔ وہ صاحب چونکہ مضبوط مذہبی پس منظر رکھتے تھے لہٰذا ان خرافات سے بچے رہے۔ ایک دن دوستوں کے اصرار پر وہ ایک عام سے ہوٹل میں چلے گئے جہاں شراب کے ساتھ ساتھ شباب بھی محو رقص تھا۔ وہ ابھی آکر بیٹھے ہی تھے کہ اسٹیج پر بو س و کنار کے گھٹیا مناظر شروع ہوگئے۔ ان کی طبیعت گھبرانے لگی اور یوں محسوس ہوا کہ الٹی ہوجائے گی۔ جب وحشت ناقابل برداشت ہوگئی تو وہ اس محفل پر تبرا بھیج کر باہر نکل آئے۔
سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ ایسا کیوں ہوا؟ عام لوگ تو ہر روز اس قسم کے واہیات مناظر دیکھتے ان مناظر سے حظ اٹھاتے اور انکی تاک میں رہتے ہیں، لیکن انہیں کوئی طبیعت کی گرانی نہیں ہوتی۔ پھر ان صاحب کے ساتھ کیا مسئلہ تھا؟۔اس سوال کا جواب درج ذیل مضمون میں موجود ہے۔
تزکیہ کا مطلب پاک کرنا اور پھر نشونما دینا اور پروا ن چڑھانا ہے۔ اس عمل کو ایک مثال سے سمجھئے ۔ ایک پلاٹ جھاڑیوں سے پٹا ہوا تھا ، لوگ وہاں کچراڈالتے ،جانور لوٹا کرتے اور غلاظت پھیلاتے تھے۔ ایک دن مالک کو خیا ل آیا کہ اس پلاٹ پر عمارت تعمیر کی جائے۔ پہلے مرحلے میں اس نے جانوروں کو بے دخل کیا،تمام جھاڑیوں کا صفایا کروایا،غلاظت دور کی اور زمین کو تعمیر کے لئے ہموار کردیا۔ اگلے مرحلے میں اس نے بنیادیں کھدوائیں، ڈھانچہ کھڑاکیا،پلاسٹراور رنگ و روغن کروایا اور پھر اعلیٰ درجے کی آرائش و زیبائش سے ایک شاندار بنگلے کی تعمیر مکمل کی۔حفاظت ، صفائی اور ستھرائی کے لئے تربیت یافتہ خدام بھرتی کئے گئے اورگردو غبار سے بچانے کے لئے دروازے اور کھڑکیوں کو مضبوط پیکنگ سے بند کیا گیا۔ یہ وہی زمین تھی جس پر کتے پیشاب کیا کرتے تھے مگر آج اس شفاف سطح پر چڑیا کی بیٹ بھی گورا نہ تھی ۔
تزکیہ نفس بھی تزکیہ پلاٹ سے ملتاجلتا عمل ہے۔تزکیہ نفس کی ابتدا بھی علم و عمل کی تطہیر سے ہوتی ہے۔ابتدا میں شر ک اور انکارآخرت کی جھاڑیوں کو صاف کیا جاتا، شہوت کے وحشی جانورکو نکیل ڈالی جاتی،اور لوگوں کو نقصان پہنچانے والی اخلاقی غلاظتوں کو دھویا جاتا ہے۔ دوسرے مرحلے میں نماز ، زکوٰۃ،روزہ اور حج سے ایک نئی شخصیت کی بنیادیں قائم کی جاتی ہیں۔ان عبادات کے ستونوں پر اخلاقیات کا ڈھانچہ تعمیر ہوتا ہے ، اور اس ڈھانچے پر نوافل کا پلاسٹر اور احسان کا رنگ و روغن کیا جاتا ہے۔ آنکھ، کان ، منہ اور لمس کے کھڑکی دروازے بند کرکے ہر حرام گردو غبار کا داخلہ روک دیا جاتا ہے ۔حفاظت کے لئے تقوٰی کا چوکیدار کھڑا کیا جاتا جبکہ روز مرہ کی صفائی کا کام توبہ کے سپر کردیا جاتا ہے۔یوں ایک ربانی انسان کی شخصیت تعمیر ہوگئی۔یہ وہی شخصیت ہے جو شیطان کے وسوسوں کی آماجگاہ تھی اور نفس کے ہر ناجائزتقاضوں پر لبیک کہا کرتی تھی۔لیکن آج یہ شخصیت خدا کے نور سے معمور، اسکی یادوں سے مسحور اور اسکی جنت کے نشے سے مخمور ہے جس میں کسی گناہ یا معصیت کی کوئی مستقل گنجائش نہیں۔چنانچہ اب اسے بوس و کنار کے مناظر تنگ کرتے، فحش کلام وحشت پیدا کرتا ،ناجائز لمس تکلیف دیتا اور نفس کو آلودہ کرنے والی غذا زہر معلوم ہوتی ہے۔ اب یہ شرک ،آخرت کی ناکامی کے تصور سے بھی کانپ جاتی ہے۔
کیا ممکن ہے کہ ایک صاف ستھرے محل میں کچرااڑتا پھرے ،گدھالید کر جائے، کتے دندناتے پھریں اور جھاڑیاں اگنے لگیں ؟ اگر نہیں تو کیا یہ ممکن ہے کہ ایک پاک صاف نفس شرک، دنیا پرستی، حرام خوری، ایذا رسانی اور خدا کی نافرمانیوں کی آماجگاہ بن جائے؟
قد افلح من زکٰھا وقد خاب من دسٰھا۔
جس نے نفس کو پاک کیا وہ فلح پاگیا اور جس نے اسے آلودہ کیا وہ نامراد ہوا۔(سورہٗ الشمس)

Advertisements

4 responses to this post.

  1. Posted by abubakar on 27/03/2012 at 6:49 شام

    asslam o alaikum.mene apke mazameen dekhe muje buhat nafa mand mehsoos hoe ,apke lye dil se dua he k Allah apko jazae khaer ata farmae,or apke mazamenn waqaT BA waqat dosron tak puhchane ki koshish ki jae gi,,Allah tala ham sab ka hamyo nasir ho.

    جواب دیجیے

  2. May Allah bless you. Very few are safe from this kink of life. Majority of us are involved in one way or another cause of the internet or the various channels being telecast . May Allah save us from this evil. Aameen

    جواب دیجیے

  3. Posted by Iftikhar Bashir on 05/03/2012 at 10:24 صبح

    JazakAllah khair. May Allah s.w.t. guide us to the right direction. aameen.

    جواب دیجیے

  4. جزاک اللہ خیر، اللہ تعالی ہم سب کو اچھے عمل کرنے کی توفیق دے

    جواب دیجیے

تبصرہ کیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s