قران کا مطلوب انسان

اللہ نے اس گناہگار کو اس سعادت سے سرفراز کیا کہ اس نے قران مجید میں جابجا بکھری ہوئی اس دعوت ایمان و عمل صالح کی تفصیل کو اکٹھا کر کے ایک ساتھ بیان کر دیا ہے۔“

”لوگ ‘جب زندگی شروع ہوگی’ کو میری سب سے بڑی تصنیف سمجھتے ہیں، لیکن میرے لیے سب سے بڑی سعادت ‘قران کا مطلوب انسان’ کی اشاعت ہے۔ یہ اول تا آخر ﷲ تعالیٰ کے الفاظ میں اس راستے کا بیان ہےجو اصل زندگی کے آغاز پر ہم سب کو جنت کے بہترین انجام سے ہمکنار کرسکتا ہے۔“

”’جب زندگی شروع ہوگی’ کو پڑھ کر لوگوں کے دلوں میں جنت میں جانے اور جہنم کے انجام سے بچنے کی خواہش شدت سے پیدا ہوئی تھی۔ مگر جنت خواہش سے نہیں عمل سے ملتی ہے۔ یہ بندہء عاجز قران مجید کے مستند ترین الفاظ اور احادیث کے اسوہ حسنہ کی روشنی میں وہ راستہ بھی جنت کے چاہنے والوں کے سامنے رکھ رہا ہے جو انہیں سیدھا ان کی منزل تک پہنچا دےگا۔ میری خواہش ہے کہ ہر مسلمان اس کتاب کو پڑھے ارو دوسروں کو پڑھائے۔ اس لیے کہ یہ میری تصنیف نہیں کلامِ الٰہی کا بیان ہے۔ اس سے ذیادہ سیدھی اور سچی بات کوئی نہیں ہوسکتی۔“

قران کا مطلوب انسان کیا ہے؟

اس سوال کے جواب کو قران مجید کے ۲۳ مقامات سے منتخب کیا گیا ہے۔

ابتدا میں مکی پھر مدنی سورتوں کو رکھا گیا ہے۔ اس ترتیب کا سبب اس بات کو واضح کرنا ہےکہ دین کی بنیادی دعوت ہر دور اور ہر طرح کے حالات میں ایک ہی رہتی ہے۔

ہر مجموعہء آیات کا ایک عنوان تجویز کیا گیا ہے، جو ان آیات کی ابتدا یا اختتام پر ﷲ تعالیٰ نے خود بیان کیا ہے۔ ہر جگہ ‘عنونات و مطالبات’ کے تحت اس کی وضاحت کردی گئی ہے۔ اس عنوان سے یہ بات بالکل واضح ہوجائے گی کہ جو احکام دیے جارہے ہیں وہ ﷲ تعالیٰ کو عین مطلوب ہیں۔

Abu Yahya

ڈاؤن لوڈ کے لئے نیچے کلک کریں
قرآن کا مطلوب انسان

تبصرہ کیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s