Posts Tagged ‘عہد الست’

اللہ تعالی کی اسکیم سے متعلق کچھ سوالات

السلام علیکم
آپ یہ کہتے ہیں کہ انسان کا خدا سے عالم ارواح میں ایک معاہدہ ہوا تھا۔ آپ نے لکھا ہے کہ یہ معاہدہ انسان کی آزادانہ مرضی سے ہوا تھا۔ اس کے لیے آپ ڈیلی لائف سے ثبوت بھی دیتے ہیں۔ اس سے یہ لگتا ہے کہ یہ ایمان بالغیب کی قسم کی چیز ہے۔ یہ معاہدہ مجھے بہت کنفیوژن میں ڈال رہا ہے اور یہ مائتھالوجی لگ رہی ہے۔ اس پر کچھ سوالات ہیں:
۱۔ ہمارے پاس کوئی ٹھوس ثبوت ہے کہ ہم نے یہ معاہدہ کیا ہے؟
۲۔ کیا قیامت تک پیدا ہونے والے ہر آدمی کی روح وہاں موجود تھی یا جب پیدا ہوا تھا کو پڑھنا جاری رکھیں

عہد الست.پروفیسر محمد عقیل


خالق کائنات نے مٹی سے انسان کا پتلا بنایا،اسکی نکھ سکھ درست کی، اسے سنوارا، پھر اس میں اپنی روح پھونک کر حیات دی اور شعور بخشا۔ پھر انسان کی پشت سے پیدا ہونے والے تمام بنی نوع انسانوں کی روحوں کو حاضر کیا، ان سے اپنا تعارف کرایا، دنیا کے بارے میں اپنا نقشہ بتایا کہ میں ایک خطرات سے پر دنیا میں تمہیں بھیجنا چاہتا ہوں جہاں نیکی بھی ہے اور بدی بھی، شیطان بھی ہے اور پیغمبر بھی۔ وہاں ایک مدت تم نے گذارنی ہے پھر پلٹ کر میرے پاس ہی آنا ہے۔ تو نیکوں کو جنت اور بدوں کو جہنم ملے گی۔کون ہے جو اس دنیا میں جانا چاہتا اور خود کو آزمانا چاہتا ہے کو پڑھنا جاری رکھیں

نظر اندازخدا .پروفیسر محمد عقیل


’’ بہت کم ظرف ہیں آپ لوگ‘‘۔ اچانک پرنسپل صاحب کی آواز کانفرنس ہال میں گونجی۔’’ اتنی محنت سے میں نے اس کانفرنس ہال کی تزین و آرائش کی لیکن کسی نے آنکھ اٹھا کر بھی نہ دیکھا‘‘۔ پرنسپل صاحب کی شکایت پر تمام اسٹاف نے انکی کاوش پر انہیں مبارک باد دینا شروع کردی۔کوئی رنگ و روغن کی تعریف کرہا تھا تو کوئی کارپٹ کے قصیدوں میں مگن تھا۔
اچانک میرے ذہن میں ایک خیال وارد ہوا۔ خدا نے بھی اتنی بڑی کائنات تنہا تخلیق کی۔ آسمان کو وسعتیں دے کر اس میں طرح طرح کے پرندے اڑائے ، زمین کو ہموار کرکے حیوانات دوڑائے،مٹی کو نرم کرکے نباتات اگائے، پاتال میں حشرات سمو ئے،سمندر کے عمیق گڑھوں کو پانی سے بھر کے اس میں آبی مخلوق پیدا کی ، پہاڑوں کو کھڑا کرکے معدنیات چھپادیں۔لیکن کوئی اسکی خلاقی کی داد نہیں دیتا، کوئی اسکی مصوری کو نہیں سراہتا۔، کوئی نہیں کائنات کی گنگناہٹ کا نغمہ سنے،کوئی نہیں جو آسمان سے جاری ہونے والی نشریات کو دیکھے۔ کو پڑھنا جاری رکھیں

%d bloggers like this: