عہد صحابہ اور جدید ذہن کے شبہات

اسلام اللہ کا منتخب کردہ دین ہے جسے آخرت میں کامیابی کے لئے ماننا لازمی ہے۔ لیکن جب ایک عام شخص اسلامی تاریخ کا مطالعہ کرتا ہے تو وہ یہ دیکھ کر حیران و پریشان ہوجاتا ہے کہ صحابہ کی تاریخ ابتدا ہی سے تنازعات اور شبہات سے بھری ہوئی ہے۔ کیہں حضرت فاطمہ اور ابو بکر کے اختلافات نظر آتے ہیں تو کہیں حضرت علی و امیر معاویہ خلافت کے مسئلے پر اختلاف رکھتے ہیں۔ کہیں حضرت عائشہ حضرت علی سے جنگ میں مصروف دکھائی دیتی ہیں تو کہیں یزید و حسین کا تنازعہ کھڑا ہوجاتا ہے۔ ایک عام مسلمان تاریخ پڑھنے کے بعد کئی سوالات اٹھاتا اور ان کے جواب جاننے کی کوشش کرتا ہے۔ لیکن جب وہ تاریخی کتب کا مطالعہ کرتا ہے تو بات سلجھنے کی بجائے اور الجھ جاتی ہے۔
میرے انتہائی محترم دوست جناب محمد مبشر نذیر کی یہ کتاب ان الجھنوں کو رفع کرتی، صحابہ کی درست تصویر سامنے لاتی اور ان شبہات کو رفع کرنے کی کوشش کرتی ہے۔ اس کتاب کا مطالعہ ہر اس شخص کے
لئے ضروری ہے جو اپنی تاریخ پر لگے داغوں کو جاننا چاہتا اور ان کی مناسب توجیہ کرنا چاہتا ہے۔

عہد صحابہ اور جدید ذہن کے شبہات

2 responses to this post.

  1. صحابہ کرام کی سیرت پر مطالعہ کی انتہائی ضرورت ہے
    شکریہ آُ کا
    اور کاش کہ ہم ان کی سیرت کو سمجھ کر عمل کر سکیں

    جواب دیں

  2. Posted by Asad Qureshi on 05/10/2012 at 1:31 صبح

    Excellent topic I will read this book because every Muslim need to understand their history and correct the misconceptions about our religion especially nonmuslims propaganda about our Sihabas. Jazakallah Khair for the info.

    جواب دیں

تبصرہ کیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s